میں غریب ہوں


کیوں روتی ہو ؟
پیسے نہیں ہیں اس لئے روتی ہوں .
اس میں رونا کیسا ؟
پیسے نہیں ہوں گے تو روٹی کیسے لوں گی؟ پیٹ کا دوزخ کیسے بھرے گا ؟ جاؤ بیبی ؛ ہمارا کیا پوچھتی ہو ، تمہارے پاس تو سب کچھ ہے ….
تم کیا جانو ! پیسے تو کوئی بھی دے دے گا تمہے … میری طر ح غریب تو نہیں ہو …
غریب ؛ بیبی کیوں مذاق کرتی ہو ….
مذاق نہیں ، سچ ہے .
بیبی سب تو ہے تمہارے پاس … پیسا، کپڑا ، گھر ، رزق ..
پیسا تو تمہے کوئی بھی دے دے گا ، مے بھی دے دوں گی ….
ہاں میرے پاس سب ہے پر میں پھر بھی غریب ہوں ، کیوں کہ میرے پاس وہ نہیں ہے جو تمہارے پاس ہے .
میرے پاس ؟ بیبی میرے پاس کیا ہے ؟ میں تو ….
تمہارے پاس وہ ہے جو میرے پاس نہیں ہے …
کیا بیبی ؟
تمہارے پاس کیا نہیں ہے ؟
میرے پاس ….
میں غریب ہوں ….. ہاں ….
میرے پاس میرا بابا نہیں ہے !

Advertisements

1 Comment

  1. </3


Comments RSS TrackBack Identifier URI

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s