مرد کی محبّت


محبّت !

محبّت صرف عورت کرتی ہے ، اپنا سب کچھ ایک شخص کے نام کر کے . عورت کی محبّت اسے ایک وجود کے گرد محصور کر دیتی ہے. وہ صرف اسی شخص کو سوچتی ہے اور اسی کی پسند کے مطابق خود کو ڈھال لیتی ہے. اسے باقی دنیا سے غرض نہیں ہوتی، وہ اپنی انا کو خود اپنے ہی پیروں تلے روند کر صرف اپنی محبّت کو پوجتی ہے.

مرد؛ مرد کسی عورت سے محبّت نہیں کرتا. وہ صرف اپنی آنا اپنی ذات سے محبّت کرتا ہے. اسے عورت اپنے قدموں میں جھکی ہوئی چاہیے. وو خود کو خدا بنا لیتا ہے اور چاہتا ہے عورت اسے بلا کسی عذر کے پوجتی رہے. مرد صرف حاصل کرنا چاہتا ہے. اور جو عورت اسے بغیر کسی تگ و دو کے مل جائے وہ اسے ٹھکرا کر اگے چل دیتا ہے. اسے اس بات کی کوئی پرواہ نہیں ہوتی کے وہ عورت اسکی محبّت میں خود کو بھلا کر صرف اس کے لئے اپنا آپ بدلنے کو تیار ہو گیی ہے. وہ عورت کے چہرے پہ لکھی تحریر نہیں پڑھ سکتا. مرد جسے حاصل کر لے اسے توڑ دیتا ہے. اور یہی اسکی انا کی تسکین ہوتی ہے.

مرد عورت کو ٹھوکر مار کر چل دیتا ہے اور عورت تمام عمر ایک وصل لاحاصل میں سرگرداں رہتی ہے. اسکی انا اور خوداری اسکی محبّت کے سامنے ہتھیار ڈال دیتی ہے. پھر تمام عمر وہ ٹھکراے جانے کی اذیت سہتی ہے اور خود کو بہلاتی رہتی ہے.

مرد کبھی محبّت نہیں کرتا . مرد اپنی انا کہ حصار میں قید رہتا ہے. اسے عورت کی محبّت کی نہیں اپنی جیت سے لگاو ہوتا ہے!

مرد کی محبّت ایک سراب کی مانند ہے اور سراب کبھی حقیقت نہیں بنتا!

Inspiration from Ashfaq Ahmed!

Advertisements

From the page of Mustansar Hussain Tarar


اسنے کہا کہ کونسا تحفہ ہے من پسند

میں نے کہا وہ شام جو اب تک ادھار ہے !

Earthquake in Pakistan; 26 October 2015!


And Allah says, I show you signs so you could learn!

We as human being forget things easily but moments recall in front of us; moments which have passed and moments we try to forget. Despite of all our efforts, it happens that history repeats itself.

I still remember the horror of October 2005 earthquake and how could I forget that. It happened in front of my eyes and everything was so shallow that I couldn’t figured out how and where to run. Deaths, injuries, screams, blood; People were crying for their loved ones. Everyone seemed broken, there were tears and heartaches as everyone was effected one or the other way. We survived.

Today after 10 years, October 26, 2015 Pakistan was once again hit by massive 8.1 earthquake. Though I am not in Pakistan but I could feel the pain of people there. My homeland is again at the verge of destruction, people lost their loved ones, hospitals are no more enough to get hold of injured and dead. Death toll is rising!

Once again we are in the situation of asking forgiveness from Allah. We should! Irrespective of political and sects differences, we need to stand together on humanitarian basis to extend a helping hand to each other. To wipe out tears from eyes, to open the doors of our hearts and houses for our brothers.

Be Generous, be a Human!

Have fear of Allah and ask mercy from him!

#PrayforPakistan

P

Happy 34th Birthday to Me!


It has been 34 years since I landed in this world  😛

34 years! it’s long time, isn’t it? 🙂

happy-birthday

So for today; This is the only celebration I can do!

Happy Birthday to Me!